رشتہ داوروں کی بیوہ اور یتیم بچے کی کمرشل اراضی پر قبضے کی کوشش قاتلانہ حملہ

Spread the love

لیاقت پور کے شہر خان بیلا میں شوہر کی وفات کے بعد لالچی رشتہ داروں نے بیوہ اور یتیم بچے کی زندگی اجیرن کر دی خاوند کی جانب سے ملنے والی کمرشل چودہ مرلے اراضی پر قبضے کی کوشش قاتلانہ حملہ اندراج مقدمہ کے باوجود ملزمان آزاد مقامی بااثر سیاسی شخصیت کی ملزمان کو پشت پنائی ڈی پی او رحیم یار خان کا حکم بھی ہوا ہو گیا

 

تفصیلات کے مطابق امیر مائی بیوہ کریم بخش کو بھیلا نے زبردست احتجاج کرتے ہوئے انکشاف کیا کہ اسے اس کے شوہر کی وفات کے بعد برلب شیدانی روڈ عباس نگر موضع اللہ جیوایا لاڑ 14مرلے اراضی وراثت میں سے آئی جس پر میرے مرحوم شوہر کے رشتہ دار نذیر احمد ،،،،واجد ولد نذیر احمد ،نبی بخش، محمد علی وغیرہ قبضہ کرنے کی کوشش کر رہے ہیں حالانکہ محکمہ مال نے اپنی رپورٹ میں اس پلاٹ کو میری ملکیت قرار دیا ہے اس پلاٹ میں اپنا مکان تعمیر کرکے یتیم بیٹے کے ساتھ رہنا چاہتی ہوں مگر ملزمان مجھے مکان تعمیر نہیں کرنے دے رہے چند روز قبل ملزمان نے مجھ پر حملہ کیا تھا جس کا مقدمہ نمبر 22/223 تھانہ شیدانی میں درج ہوا مگر مقامی بااثر شخصیت کے دباؤ پر پولیس ملزم گرفتار نہیں کر رہی ہےمیں نے حصولِ انصاف کے لیے ڈی پی او رحیم یار خان کو درخواست دی مگر بااثر سیاسی شخصیت کے دباؤ پر ملزمان کے خلاف کارروائی نہیں ہو رہی امیر مائی نے ڈی پی او رحیم یار خان و اعلی حکام سے کاروائی کر کے انصاف دینے کامطالبہ کیا ہے